41.1 C
Delhi
مئی 29, 2024
Samaj News

دودھ پینے کا صحیح وقت کیا ہے؟

نئی دہلی، سماج نیوز: دودھ ایک ایسی چیز ہے جسے انسان پیدائش سے بڑھاپے تک پیتا رہتا ہے۔ دودھ اپنے غذائیت کی وجہ سے ہندوستانی کمیونٹی میں ہر ماں کا پسندیدہ بن گیا ہے۔ اس میں موجود کیلشیم، تھامین، نیکوٹینک ایسڈ، پروٹین اور دیگر غذائی اجزاء ہڈیوں، مسلز کو مضبوط بناتے ہیں اور کہا جاتا ہے کہ یہ دانتوں کے لیے اچھا ہے۔ لیکن دودھ پینے کا صحیح وقت کیا ہے؟ دودھ کو کس وقت پینا چاہیے تاکہ جسم کو ہر طرح سے فائدہ پہنچ سکے۔ اس کے لیے ماہرین صحت کی رائے مختلف ہے۔ آئیے جانتے ہیں کہ دودھ پینے کا صحیح وقت کیا ہے۔ ماہرین صحت عمر اور جسمانی ضروریات کے مطابق مختلف اوقات میں دودھ پینے کی وکالت کرتے ہیں۔ دراصل جسم کی ضروریات اور صحت کی حالت (ہضم کی طاقت) عمر کے ساتھ بدلتی رہتی ہے۔ جیسے کسی کو اچھی نیند کے لیے دودھ چاہیے تو کسی کو ہڈیوں کی مضبوطی کے لیے دودھ چاہیے۔ کوئی جسم بنانے کے لیے دودھ پینا چاہتا ہے تو کسی کو دودھ کی شکل میں کیلشیم کی خوراککی ضرورت ہوتی ہے۔ ایسے میں یہ جاننا ضروری ہو جاتا ہے کہ کس کو کس وقت دودھ پینا چاہیے۔
بچوں کی بات کی جائے تو صبح سویرے بچوں کو دودھ دینا درست ہے۔ درحقیقت بچوں کو صبح سویرے فل کریم دودھ دینا چاہیے تاکہ وہ پورے دن کی کیلشیم کی ضروریات پوری کر سکیں۔ ہڈیوں کو مضبوط بنانے کے ساتھ ساتھ صبح کے وقت دودھ پینے سے پوٹاشیم، فاسفورس، میگنیشیم اور پروٹین جیسے بہت سے غذائی اجزا ملتے ہیں جو دن بھر کھیلنے اور کودنے والے بچوں کو درکار ہوتے ہیں۔
اسی طرح جو لوگ جسم بنانا چاہتے ہیں یا کھیل کھیلنا چاہتے ہیں انہیں بھی دن کے وقت دودھ پینا چاہیے تاکہ دن بھر توانائی کی کمی محسوس نہ ہو۔ لیکن وہ لوگ جو بوڑھے ہیں اور جن کا میٹابولزم کمزور ہے، انہیں صبح دودھ نہ پینے کا مشورہ دیا جاتا ہے، کیونکہ صبح دودھ پینے کے بعد دن بھر پیٹ میں بھاری پن کا احساس رہتا ہے۔
بوڑھے لوگ کم متحرک رہتے ہیں اس لیے انہیں صبح کے بجائے شام کو دودھ پینا چاہیے اور وہ بھی گائے کا دودھ کیونکہ یہ ہلکا اور ہضم ہوتا ہے۔آیوروید رات کو گرم دودھ پینے کی وکالت کرتا ہے جو کہ درست بھی ہے لیکن ان لوگوں کو رات کو دودھ پینا چاہیے جو رات کو ٹھیک سے نہیں سوتے اور جن کا پیٹ ٹھیک سے صاف نہیں ہوتا۔ رات کو دودھ پینے سے جسم میں ٹرپٹوفن نامی امائنو ایسڈ خارج ہوتا ہے جو سونے میں مدد دیتا ہے۔ رات کو دودھ پینے سے ذہنی تناؤ کم ہوتا ہے اور رات کو بھوک نہیں لگتی۔یہاں یہ بات قابل غور ہے کہ ذیابیطس کے مرض میں مبتلا افراد کو رات کو دودھ نہ پینے کا مشورہ دیا جاتا ہے۔

Related posts

شادی میں ڈانس کرتے ہوئے 19سالہ نوجوان کی موت

www.samajnews.in

’بھارت جوڑو یاترا‘ کو یوپی میں مل رہی ہے زبردست حمایت

www.samajnews.in

ہر عمر کی خواتین کو بغیر محرم حج یا عمرہ کی اجازت

www.samajnews.in