40.1 C
Delhi
مئی 22, 2024
Samaj News

مشرقی اترپردیش میں سیلاب نے مچائی تباہی

سینکڑوں گاؤں زیر آب ، لوگوں میں خوف و ہراس اور انتظامیہ کیخلاف ناراضگی :

 

سدھارتھ نگر:سدھارتھ نگر ضلع کے اٹوا تحصیل علاقے کی بوڑھی راپتی ​​ندی پر اسوگاوا مدرھوا ڈیم ٹوٹ گیا اور بوڑھی راپتی ​​ندی نے تباہی مچانا شروع کر دی۔ بتایا جا رہا ہے کہ درجنوںگائوں زیر آب آ گئے ہیں۔ جس طرح سے بوڑھی راپتی میں تغیانی بڑھ رہی ہے، اس سے لوگوں میں خوف و ہراس اور انتظامیہ کے خلاف ناراضگی ہے۔آپ کو بتاتے چلیں کہ یہ ڈیم لوگوں کی نقل و حرکت کا مرکز ہونے کے ساتھ ساتھ سیلاب سے بچاؤ میں بھی اہم تھا۔ بارش اور پانی جمع ہونے کے بعد ڈیم میں رساؤ شروع ہو گیا۔ لیکن حکام نے توجہ نہیں دی۔ ضلع میں مسلسل سیلاب کی تباہ کاریاں جاری ہیں۔ پہاڑ سے نکلنے والے دریا مسلسل ڈوب کر لوگوں پر ٹوٹ رہے ہیں۔ شہرت گڑھ، ڈومریا گنج، اٹاوہ اور بانسی تحصیلوں میں سیلاب کی تباہ کاریاں جاری ہیں۔کسی طرح لوگوں نے بڑھتے ہوئے پانی سے جان بچانے کے لیے چھتوں پر پناہ لی تو کچھ نے اونچی جگہوں پر۔ لوگوں نے انتظامیہ پر لاپرواہی کا الزام لگایا ہے۔ ان کا الزام ہے کہ محکمہ آبپاشی کو اس کے بعد لیکیج کے بارے میں پہلے مطلع کیا گیا تھا۔ گاؤں کے سربراہ سمیت گاؤں والوں نے انتظامیہ سے جلد سے جلد مدد کی اپیل کی ہے۔ لیکن اب تک نہ تو راحت اور بچاؤ کا کام شروع ہوا ہے۔ گاؤں والوںنے کہا کہ بعد میں لیکیج کی اطلاع محکمہ آبپاشی کو دے دی گئی تھی۔ اس کے باوجود یہاں کوئی قدم نہیں اٹھایا گیا جس کی وجہ سے گاؤں پانی میں ڈوب گیا۔ لوگوں نے ڈیم پر پناہ لے رکھی ہے۔ بھاری نقصان ہوا ہے اور انتظامیہ خاموش ہے۔گھروں میں پانی کی وجہ سے لوگ چھت پر ورق تن کر کھانا پکانے پر مجبور ہیں۔ روزمرہ کی اشیاء خریدنے کے لیے یا ایمرجنسی کی صورت میں گاؤں سے باہر جانے کے لیے یا تو جگاڑو کشتی ہے یا لوگ گردن تک پانی میں داخل ہو کر نکل رہے ہیں۔لوگوں کا کہنا ہے کہ سیلاب میں پھنسے لوگ کھانے یا دیگر ضروری اشیاء کو ترس رہے ہیں۔ بھرواتھیا مستحکم کے کئی گھروں میں پانی بھر جانے سے لوگوں نے رشتہ داری میں پناہ لینے کے لیے نقل مکانی کی ہے۔بلرام پور، سدھارتھ نگر اور گونڈہ کے اکثر وبیشتر مواضعات و علاقوں میں حالیہ تباہ کن اور ہوش ربا سیلاب نے لوگوں کو بے حد متاثر کردیا ہے، اخباری رپورٹ اور سروے کے مطابق کئی سو مواضعات غرق آب ہیں، تیار فصلیں تباہ وبرباد ہوچکی ہیں، گھروں میں پانی داخل ہوچکا ہے، اشیائے خورد ونوش کی قلت، گیس سلینڈر کی پریشانی کے علاوہ دیگر ضروریاتِ زندگی سے لوگ نبرد آزما ہیں، اس وقت سیلاب زدگان کی جان ومال پر خطرات کا سایہ منڈلا رہا ہے، بعض علاقوں سے ناخوش گوار اور جانی نقصانات کی معتبر خبریں موصول ہوئی ہو رہی ہیں۔ بلرام پور کے مواضعات : شنکر نگر، بونڈیہار، بیت نار، بھگوتاپور، رنجیت پور، پہلووارہ، بیلہا، بھکچہیا، بھیکم پور، ہرہٹہ، مصرولیا، مجھووا، ایم ایل کے کالج، نہر بالا گنج، محلہ گدرھوا، سیکہرپور وغیرہسدھارتھ نگر کے مواضعات :راما پور، امہوا، ندولیا، اکرہرا،رم نگرا، کومری، جھکیہا، برم پور، دوبہارے، بالا نگر، کجرہواں، پرتاب پور، خیرا، جھنگہوا، ہڑکولی، دھنی، مچکوا، بھتہواں وغیرہ

Related posts

2024 میں زیادہ سے زیادہ مراقبہ کی مشق کریں

www.samajnews.in

پونے ضمنی ودھان سبھا الیکشن میں MEP امیدوار میدان میں

www.samajnews.in

راجیہ سبھا میں مودی حکومت پر خوب گرجے ملکارجن کھڑگے

www.samajnews.in