42.1 C
Delhi
مئی 19, 2024
Samaj News

کووڈ کا پھر ستا رہا خوف، مہاراشٹر، کیرالہ سمیت 6ریاستوں کیلئے الرٹ جاری

نئی دہلی: مرکزی حکومت نے مہاراشٹر اور کیرالہ سمیت چھ ریاستوں کو گزشتہ ہفتوں میں کووڈ انفیکشن کے معاملات میں تیزی سے اضافہ کے پیش نظر چوکس رہنے کی ہدایت دی ہے۔مرکزی وزارت صحت اور خاندانی بہبود کے سکریٹری راجیش بھوشن نے جمعرات کو گجرات، مہاراشٹر، تلنگانہ، تمل ناڈو، کیرالہ اور کرناٹک کے پرنسپل سکریٹریوں، کابینہ سکریٹریوں، چیف سکریٹریوں اور انڈر چیف سکریٹریوں کو بھیجے گئے ایک خط میں کہا ہے۔ 15مارچ تک پچھلے ہفتوں میں کووڈ انفیکشن کے معاملات میں تیزی سے اضافہ ہوا ہے ۔ اس تاریخ تک ملک میں کووڈ انفیکشن کے معاملات کی تعداد 3264 تک پہنچ گئی ہے ، جبکہ 8مارچ تک یہ تعداد 2082 تھی۔ مرکزی سکریٹری نے ان تمام ریاستوں کو الگ الگ خط لکھے ہیں۔ خطوط میں ان ریاستوں میں انفیکشن کے ضلع وار کیسوں کی تفصیلات دیتے ہوئے کہا گیا ہے کہ وہ کووڈ کے اصولوں پر سختی سے عمل کریں۔ نئے ابھرتے ہوئے علاقوں اور کووڈ انفیکشن کے ممکنہ علاقوں کی مسلسل نگرانی کی جائے۔ مرکزی سکریٹری نے ان تمام ریاستوں کو الگ الگ خط لکھے ہیں۔ خطوط میں ان ریاستوں میں انفیکشن کے ضلع وار کیسوں کی تفصیلات پیش کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ وہ کووڈ کے اصولوں پر سختی سے عمل کریں۔ نئے ابھرتے ہوئے علاقوں اور کووڈ انفیکشن کے ممکنہ علاقوں کی مسلسل نگرانی کی جانی چاہیے ۔ نئے متاثرہ افراد کے نمونے جینوم کی ترتیب کے لیے بھیجے جائیں۔ کووڈ ٹیسٹنگ میں تیزی لائی جائے ۔خط میں کہا گیا ہے کہ مرکز کی دستیاب مدد کووڈ سے متعلق کسی بھی صورتحال سے نمٹنے کے لیے استعمال کی جانی چاہیے۔ خط میں کہا گیا ہے کہ گجرات کے سات اضلاع احمد آباد، وڈودرا، سورت، راجکوٹ، مہسانہ، بھاو نگر اور امریلی میں کووڈ انفیکشن میں اضافہ ہوا ہے ۔ مہاراشٹر کو بھیجے گئے خط میں پونے ، ممبئی، تھانے ، ممبئی (بیرونی)، ناسک، احمد نگر اور ناگپور نام کے 7اضلاع کا ذکر ہے۔ تلنگانہ میں ایک ضلع حیدرآباد، تمل ناڈو کے چار اضلاع سیلم، نیلگیرس، تروپپور اور تروچیراپلی، پانچ اضلاع ارناکولم، کولم، پٹھانمتھیٹا، تھریسور، کیرالہ کے پلکاڈ اور چار اضلاع شیوموگا، کالابوراگی، میسور اور کرناٹک کے اترا کنڑ میں کووڈ انفیکشنز میں اضافہ دیکھا گیا ہے ۔

Related posts

انڈیا میں ’چوروں کے گاؤں‘ کا وہ لٹیرا، جو امیروں سے مال لوٹ کر غریبوں میں تقسیم کرتا تھا

www.samajnews.in

بی بی سی کی آواز دبانا چاہتی ہے حکومت، تمام دفاتر پر چھاپے

www.samajnews.in

11سال میں 16لاکھ بھارتیوں نے چھوڑی شہریت

www.samajnews.in