33.1 C
Delhi
جولائی 24, 2024
Samaj News

فوج بہادر لیکن حکومت کمزور، توانگ پر پارلیمنٹ میں بحث ضروری: اویسی

نئی دہلی: اروناچل پردیش کے توانگ علاقے میں ہوئی جھڑپ کا معاملہ طول پکڑتا جارہا ہے۔ آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین (اے آئی ایم آئی ایم) کے سربراہ اسدالدین اویسی نے حقیقی کنٹرول لائن(ایل اے سی) پر ہندوستان اور چین کے فوجیوں کے درمیان ہوئی جھڑپ کو لے کر مرکزی حکومت کو گھیرا ہے۔ اسدالدین اویسی نے پارلیمنٹ میں بحث کرانے کی اجازت دینے کا حکومت سے مطالبہ کیا ہے۔اسدالدین اویسی نے کہا کہ ہم حکومت سے لگاتار پارلیمنٹ میں بحث کرانے کی درخواست اور مطالبہ کررہے ہیں، لیکن جب ایل او سی کی صورتحال کی بات آتی ہے تو مودی حکومت شفافیت نہیں دکھاتی۔ انہوں نے کہا، حکومت آدھا سچ بول رہی ہیں، گمراہ کن حقائق پیش کررہی ہیں۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ پی ایم مودی نے یہ کہہ کر ملک کو گمراہ کیا ہے کہ کوئی بھی چینی فوجی ہندوستانی علاقے میں نہیں آئے ہیں۔اسدالدین اویسی نے کہا، پی ایم مودی نے یہ کہہ کر ملک کو گمراہ کیا ہے کہ کوئی بھی ہمارے علاقے میں داخل نہیں ہواہے۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستانی فوج بہت بہادر ہے، لیکن حکومت بہت کمزور ہے اور چین سے ڈری ہوئی ہے۔انہوں نے کہا کہ حکومت کو کُل جماعتی اجلاس طلب کرنا چاہیے یا پارلیمنٹ میں بحث کرنی چاہیے۔ یہ صاف کیا جانا چاہیے کہ چین کو لے کر حکومت کے کیا منصوبے ہیں۔ اگر حکومت سیاسی قیادت دکھاتی ہے، تو پورا ملک ان کی حمایت کرے گا۔گزشتہ دنوں، پرتشدد جھڑپ پر کانگریس نے بھی مرکزی حکومت کو گھیرا تھا۔ کانگریس نے کہا کہ توانگ سیکٹر میں ہندوستان اور چین کے فوجیوں کے درمیان جھڑپ معاملے میں حکومت ڈھیلا رویہ چھوڑ کر سخت رویے میں چین کو سمجھائے کہ اس کی یہ حرکت برداشت نہیں کی جائے گی۔

Related posts

مدرسہ رئیس العلوم پرسیا اٹوا میں 75واں یوم جمہوریہ جوش وخروش کیساتھ منایا گیا

www.samajnews.in

دہلی کے لوگ آمریت کو برداشت نہیں کریں گے:اروند کجریوال

www.samajnews.in

قرآن تمام انسانوں کیلئے لائق تعظیم اور قابل اعتماد کلام: مفتی محمد صادق مظاہری

www.samajnews.in