45.1 C
Delhi
مئی 29, 2024
Samaj News

نوٹ پر گاندھی کیساتھ لکشمی گنیش کی ہو تصویر:اروندکجریوال

لکشمی گنیش جی کی تصویر ہوگی تو پورے ملک کو ان کا آشیرواد ملے گا

نئی دہلی،سماج نیوز: عام آدمی پارٹی کے قومی کنوینر اور دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کجریوال نے وزیر اعظم نریندر مودی سے اپیل کی ہے کہ وہ ہندوستانی کرنسی پر ایک طرف مہاتما گاندھی اور دوسری طرف لکشمی گنیش جی کی تصویر لگائی جائے ۔مسٹر کجریوال نے آج ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ ہندوستانی معیشت انتہائی نازک دور سے گزر رہی ہے ۔ ڈالر کے مقابلے روپیہ دن بہ دن کمزور ہوتا جا رہا ہے ۔ ان سب چیزوں کا خمیازہ عام آدمی کو اٹھانا پڑتا ہے ۔ آزادی کے 75سال بعد بھی ہندوستان کو ترقی پذیر اور غریب ملک سمجھا جاتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم سب چاہتے ہیں کہ ہندوستان ایک ترقی یافتہ ملک بنے ۔ اس کیلئے بہت محنت اور کوشش کرنے کی ضرورت ہے ۔ ہمیں بڑی تعداد میں سکول اور اسپتال کھولنے ہوں گے ۔ ہمیں بہت بڑے پیمانے پر بجلی اور سڑک کا انفراسٹرکچر تیار کرنا ہے لیکن کوششیں تب ہی ثمر آور ہوتی ہیں جب ہمیں دیوی دیوتاؤں کا آشیرواد حاصل ہو۔ ہم کئی بار دیکھتے ہیں کہ کوششیں تو ہو رہی ہیں، لیکن نتائج سامنے نہیں آ رہے ۔ اس وقت لگتا ہے کہ دیوی دیوتاؤں کا آشیرواد ہو تو کوششیں پھلنے لگتی ہیں اور اس کے نتائج آنے لگتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ دیوالی پر ہم سب نے گنیش جی اور لکشمی جی کی پوجا کی۔ ہم سب نے بھگوان سے خوشی اور سکون کی پرارتھنا کی۔ ہم سب نے اپنے اپنے خاندان اور ملک کی خوشحالی کیلئے دعا کی۔ ہم یہ بھی دیکھتے ہیں کہ تاجر اور صنعتکار اپنے کمرے میں لکشمی جی اور گنیش جی کی مورتی ضرور لگاکر رکھتے ہیں اور ہر صبح کام شروع کرنے سے پہلے ان کی پوجا کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت اور وزیر اعظم سے اپیل ہے کہ ہندوستانی کرنسی کے ایک طرف مہاتما گاندھی کی تصویر ہے ۔ یہ جوں کی توں رکھی جائے ، لیکن دوسری طرف گنیش جی اور لکشمی جی کی تصویر لگائی جائے ۔انہوں نے کہا کہ انڈونیشیا ایک مسلم ملک ہے۔ انڈونیشیا میں 85فیصد سے زیادہ آبادی مسلمان ہے اور وہاں دو فیصد سے بھی کم ہندو ہیں لیکن وہاں ان کے نوٹ پر گنیش جی کی تصویر چھپی ہوئی ہے ۔ وزیر اعلی اروند کجریوال نے کہا کہ ہم سب دیکھ رہے ہیں کہ ہندوستانی معیشت کی حالت بہت اچھی نہیں ہے۔ ہندوستانی معیشت انتہائی نازک دور سے گزر رہی ہے۔ ہم سب دیکھتے ہیں کہ کس طرح ڈالر کے مقابلے روپیہ دن بہ دن کمزور ہوتا جا رہا ہے۔ ہمارے ملک کے ایک عام آدمی کو ان سب چیزوں کا خمیازہ بھگتنا پڑتا ہے۔ ایسا کیوں ہے کہ آزادی کو 75 سال گزر چکے ہیں، لیکن آج بھی ہندوستان ایک ترقی پذیر ملک ہے اور ہندوستان کو ایک غریب ملک سمجھا جاتا ہے۔ آپ کے قومی کنوینر اروند کجریوال نے کہا کہ ہم سب چاہتے ہیں کہ ہندوستان ایک ترقی یافتہ ملک بنے۔ ہم سب چاہتے ہیں کہ ہندوستان ایک امیر ملک بن جائے اور ہم سب چاہتے ہیں کہ ہندوستان کا ہر خاندان ایک امیر خاندان بن جائے۔ اس کے لیے بہت سے اقدامات کرنے کی ضرورت ہے، بہت محنت کی ضرورت ہے۔ ہمارے پاس اسکولوں کی ایک بڑی تعداد ہے اور اسپتال کھولنے ہیں۔ ہمیں بہت بڑے پیمانے پر بجلی اور سڑک کا انفراسٹرکچر بنانا ہے۔ لیکن کوششیں تب ہی ثمر آور ہوتی ہیں جب ہمیں دیوی دیوتاؤں کا آشیرواد حاصل ہو۔ ہمیں کوشش کرنی چاہیے اور ہم سب اپنی زندگی میں کوشش کریں۔ لیکن ہم کئی بار دیکھتے ہیں کہ ہم کوشش کر رہے ہیں، لیکن اس کے نتائج نہیں آرہے ہیں۔ اس وقت لگتا ہے کہ دیوی دیوتاؤں کا کرم ہو تو کوششیں پھلنے لگتی ہیں اور اس کے نتائج آنے لگتے ہیں۔ آپ کے قومی کنوینر اروند کجریوال نے کہا کہ 24 اکتوبر کو دیوالی تھی۔ دیوالی پر ہم سب گنیش جی اور لکشمی جی کی پوجا کرتے ہیں۔ ہم سب نے خدا سے خوشی اور سکون کی دعا کرتے ہیں۔ ہم سب نے اپنے اپنے خاندان اور ملک کی خوشحالی کے لیے دعا کرتے ہیں۔ ہم یہ بھی دیکھتے ہیں کہ کاروبار کرتے ہیں۔تاجر اور صنعت کار لکشمی جی اور گنیش جی کی مورتیوں کو اپنے اپنے کمروں میں رکھتے ہیں اور ہر صبح کام شروع کرنے سے پہلے ان کی پوجا کرتے ہیں۔ آج میں مرکزی حکومت اور وزیر اعظم سے اپیل کرتا ہوں کہ ہندوستانی کرنسی کے ایک طرف گاندھی جی کی تصویر ہے۔ اسے وہی رہنا چاہئے، لیکن دوسری طرف گنیش ہندوستانی کرنسی پر جی اور لکشمی جی کی تصویر لگائی جائے۔ عام آدمی پارٹی کے قومی کنوینر اروند کجریوال نے کہا کہ ہمیں اپنی معیشت کو بہتر بنانے اور ہندوستان کو ترقی کی راہ پر لے جانے کے لیے بہت زیادہ کوششیں کرنے کی ضرورت ہے، لیکن اس کے ساتھ ساتھ دیوی دیوتاؤں کا آشیرواد بھی درکار ہے۔ اگر ہندوستانی کرنسی پر گاندھی جی کی تصویر ہے اور دوسری طرف لکشمی جی اوراگر گنیش جی کی تصویر لگے گی تو پورے ملک کو ان کا آشیرواد ملے گا۔ لکشمی جی کو خوشحالی کی دیوی اور گنیش جی کو رکاوٹوں کو دور کرنے والا دیوتا مانا جاتا ہے۔ اس لیے ہندوستانی کرنسی پر ان دونوں دیوتاؤں کی تصویر لگانی چاہیے۔ ہم یہ نہیں کہہ رہے ہیں کہ تمام نوٹوں کو تبدیل کیا جائے بلکہ ہر مہینے نئے نوٹوں کی تعداد بڑھائی جائے۔ نوٹ چھاپ رہے ہیں، یہ ان نئے نوٹوں پر شروع کیا جا سکتا ہے اور آہستہ آہستہ لکشمی جی اور گنیش جی کے نئے نوٹ بنائے جاسکتے ہیں۔ آپ کے قومی کنوینر اروند کجریوال نے کہا کہ انڈونیشیا ایک مسلم ملک ہے۔ انڈونیشیا میں 85 فیصد سے زیادہ آبادی مسلمان ہے اور 2 فیصد سے بھی کم ہندو ہیں لیکن وہاں ان کے نوٹ پر گنیش جی کی تصویر چھپی ہوئی ہے۔ میں سمجھتا ہوں کہ یہ ایک بہت اہم قدم ہے، جو مرکزی حکومت کو اٹھانا چاہئے. آج میڈیا کے ذریعے اس ملک کے 130 کروڑ عوام کی طرف سے میں مرکزی حکومت اور وزیر اعظم سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ لکشمی جی اور گنیش جی کی تصویر ہندوستانی کرنسی پر لگائیں۔

Related posts

حیدر آباد میں ڈاکٹر نوہیرا شیخ سے منسلکہ اداروں کے کلینڈر کا اجراء

www.samajnews.in

سعودی وزیر توفیق بن فوزان الربیعہ کا بھارت دورہ، اسمرتی ایرانی کیساتھ مشترکہ کانفرنس میں عمرہ سے متعلق فراہم کی معلومات

www.samajnews.in

’کائرہے اس دیش کا پردھان منتری، لگا دو کیس مجھ پر، جیل لے جاؤ مجھے بھی!‘: پرینکا گاندھی کا وزیر اعظم مودی پر سخت حملہ

www.samajnews.in