41.1 C
Delhi
مئی 29, 2024
Samaj News

ایم ایل اے بننے کی دلچسپ کہانی

پہلی بار 1967 میں کیسے بنے ایم ایل اے ملائم سنگھ یادو

نئی دہلی، سماج نیوز: یوپی میں سماجوادی پارٹی کے بانی ملائم سنگھ یادو نے 4 اکتوبر 1992 کو سماجوادی پارٹی کی بنیاد رکھی۔ حالانکہ اس سے پہلے بھی 1967 میں ملائم سنگھ یادو نے یوپی کی سیاست میں قدم رکھا تھا اور وہ 1967 میں پہلی بار ایم ایل اے بنے۔ ان کے رکن اسمبلی بننے کی ساری کہانی بہت دلچسپ ہے۔ دراصل نتھو سنگھ یوپی کی جسونت نگر سیٹ سے ڈاکٹر رام منوہر لوہیا کی پارٹی سے ایم ایل اے ہوا کرتے تھے۔ اس سیٹ پر ڈاکٹر رام منوہر لوہیا کی پیروی کی وجہ سے ملائم سنگھ یادو کو ٹکت ملا، لیکن ان کے پاس پیسے نہیں تھے۔ ملائم سنگھ یادو کے دوست درشن سنگھ اس وقت ان کے کام آئے۔ درشن سنگھ سائیکل پر سوار ہوئے اور ملائم سنگھ پیچھے بیٹھ گئے۔ جسونت نگر ودھان سبھا کے گاؤں گاؤں کا دورہ کیا اور ‘ایک ووٹ، ایک نوٹ کا نعرہ دیا۔ملائم سنگھ کا مقابلہ کانگریس کے ایک امیدوار سے تھا۔ تب ہیموتی نندن بہوگنا کے شاگرد لکھن سنگھ یہاں سے انتخابی میدان میں تھے۔ اس وقت ملائم سنگھ سیاست کے نئے کھلاڑی تھے، دوسری طرف کانگریس کی ملک بھر میں زبردست عوامی بنیاد تھی۔ لیکن جب انتخابی نتائج آئے تو سب حیران رہ گئے۔ انہوں نے کانگریس امیدوار کو شکست دے کر کامیابی حاصل کی۔ڈاکٹر رام منوہر لوہیا اسی سال نومبر میں الیکشن جیتنے کے بعد ہی انتقال کر گئے تھے۔ اپنی موت سے پہلے انہوں نے یادو خاندان کے اس سیاسی کھلاڑی کے لیے راستہ تیار کر دیا تھا۔ خاص بات یہ ہے کہ وہ پہلی بار ایم ایل اے بنے اور پہلی بار وزیر بھی بنے۔ یہاں سے ان کی سیاست میں مکمل اینٹری ہوئی۔ اب جسونت نگر کی سیٹ کو یادو خاندان کا گڑھ سمجھا جاتا ہے۔ اکھلیش یادو کے چچا شیو پال سنگھ یادو یہاں سے موجودہ ایم ایل اے ہیں۔

Related posts

مسلم پرسنل لاءبورڈ کے تنظیمی نظام سے وابستہ توقعات

www.samajnews.in

کورونا نے چین میں مچائی تباہی، اسپتال اور شمشان گھاٹوں میں لاشوں کا انبار

www.samajnews.in

ثنا خان شادی کے تین سال بعد بنیں ماں، بیٹے کو دیا جنم دیا، کہا’’اللہ نے تقدیر میں لکھا پھر پورا کیا‘‘

www.samajnews.in