39.1 C
Delhi
مئی 22, 2024
Samaj News

پہلے ٹیسٹ میں کنگارو فیل،بھارت کی تاریخی جیت

ناگپور: اسپن گیند باز کی مدد گار وی سی اے اسٹیڈیم کی پچ پر روندر اشون کی قیادت والی جارحانہ گیند بازی کی بدولت ہندوستان نے دنیا کی نمبر ایک ٹیسٹ ٹیم آسٹریلیا کو پہلے ٹیسٹ میچ کے تیسرے دن ہفتہ کو اننگ اور 132رنوں سے ہرا کر تاریخی جیت حاصل کی ۔ودربھ کرکٹ اسٹیڈیم کی پچ پر ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کرتے ہوئے آسٹریلیا نے پہلی اننگ میں 177رن بنائے تھے جس کے جواب میں ہندوستانے ٹھوس بلے بازی کا مظاہرہ کرتے ہوئے 400رنوں کا اسکور بنایا تھا ۔ پہلی اننگ میں 223رن سے پیچھے رہنے والے آسٹریلیا پر دبدبہ بر قرار رکھتے ہوئے اشون (37رن پانچ وکٹ) اور رویندر جڈیجہ(34رن پر دو وکٹ) نے مہمان بلے بازی کی بخیہ ادھیڑ دی جب کہ محمد شمی(13رن دو وکٹ) اور اکشر پٹیل (چھ رن ایک وکٹ) نے رہی سہی کسر پوری کرتے ہوئے کنگارووَں کے خلاف ہندوستان کو سب سے بڑی جیت حاصل کی ۔ہندوستان کے خلاف آسٹریلیا کا دوسری اننگ میں یہ دوسرا سب سے کم اسکور ہے ۔ اس سے پہلے سات فروری 1981کو آسٹریلیا نے میلبورن کی پچ پر اپنی دوسری پاری میں صرف 83رن بنائے تھے ۔ گندپا وشوناتھ کے شاندار سنچری کی بدولت ہندوستان کا یہ میچ 59سے جیت حاصل کی تھی جب کہ تین نومبر2004کو ممبئی میں وانکھیڈے اسٹیڈیم پر کنگارو ٹیم ہندوستان کے خلاف 93رن پر ہار گئی تھی اور نزدیکی مقابلے میں ہندوستان کو 13رن سے جیت حاصل کی تھی۔ دوسری اننگز میں آسٹریلیا کو 32.3 اووروں میں صرف 91رن پر سمیٹنے کا سہرا اپنے ٹیسٹ کیریئر میں 31بار پانچ وکٹیں حاصل کرنے والے روی چندرن اشون کو جاتا ہے جنہوں نے اپنی کرشمائی کارکردگی سے ایک بار پھر اپوزیشن کو حیران کر دیا۔ آل راؤنڈر رویندر جڈیجہ نے دوسرے سرے پر اپنے مقصد کو آسان بنانے میں مدد کی۔ پہلی اننگز میں پانچ وکٹیں لینے والے جڈیجہ نے دوسری اننگز میں بھی کنگاروں کو خوف زدہ کرنے کا سلسلہ جاری رکھا جس کے نتیجے میں آسٹریلیا کے سات بلے باز اپنے انفرادی اسکور کو دوہرے ہندسے تک پہنچانے میں ناکام رہے ۔ سمیع اور اکشر پٹیل نے آسٹریلیا کے لوور آرڈر کو نمٹانے کا کام کیا۔اسٹیون اسمتھ (ناٹ آؤٹ 25) ہندوستانی حملے کو آخر تک ایک سرے پر جھیلتے رہے ۔ وہ دوسری اننگز میں آسٹریلیا کیلئے سب سے زیادہ رن بنانے والے کھلاڑی بنے ۔ ہندوستان کی تاریخی جیت میں کپتان روہت شرما (120)کے علاوہ اکشر پٹیل (84)اور رویندرا جڈیجہ (70)نے اہم کردار ادا کیا، جس کی وجہ سے ہندوستان اپنی پہلی اننگز میں 400رن کا چیلنجنگ اسکور بنا سکا۔ ناگپور کی ٹرن لینے والی پچ پر دونوں ٹیموں کی گرنے والی کل ملاکر 30وکٹوں میں سے 24وکٹیں اسپنروں کے حصے میں آئیں۔ آسٹریلیا کی پہلی اننگز میں جڈیجہ نے پانچ، اشون نے تین وکٹیں حاصل کیں، جب کہ ٹوڈ مرفی (124رن کے عوض 7وکٹ) نے ہندستان کی پہلی اننگز کو سمیٹنے میں اہم کردار ادا کیا۔وکٹوریہ کے 22سالہ نوجوان کھلاڑی نے اپنے ڈیبیو ٹیسٹ یہ کارنامہ سر انجام دیا۔

Related posts

ملک میں ہزاروں مسلم کنبوں کو بے گھر کردیئے جانے کا خدشہ

www.samajnews.in

کرناٹک میں10مئی کوانتخاب، 13 مئی کو نتائج

www.samajnews.in

مسلمان مرد اپنی پہلی بیوی کو ساتھ رہنے کیلئے مجبور نہیں کر سکتا: الٰہ آباد ہائی کورٹ

www.samajnews.in