42.1 C
Delhi
مئی 19, 2024
Samaj News

دہشت گردی کا درد وہی سمجھ سکتا ہے جس نے اس کو سہا ہو:راہل گاندھی

بھاری برفباری کے بیچ بھارت جوڑو یاترا سرینگر کے شیر کشمیر اسٹیڈیم میں اختتام پذیر

سرینگر، سماج نیوز: شدید برفباری کے بیچ کانگریس کے سابق صدر اہل گاندھی نے بھارت جوڑو یاترا کے اختتام پر انتہائی جذباتی انداز میں دہشت گردی پرحملہ کیا اور کہا کہ وہ لوگ اس درد کو نہیں سمجھ سکتے، جنہوں نے دہشت گردی اور تشدد کو خود نہ سہا ہو۔ انہوں نے اپنے خطاب میں ان دو فون کال کا ذکر کیا جو ان کو اپنی دادی اندرا گاندھی اور والد راجیو گاندھی کے انتقال کی خبر دینے کے لئے کئے گئے تھے۔ اپنے خطاب میں انہوں وزیر اعظم نریندر مودی، وزیر داخلہ امت شاہ اور قومی سلامتی مشیر اجیت ڈووال پر حملہ کرتے ہوئے کہا کہ یہ درد وہ نہیں سمجھ سکتے یہ درد ایک کشمیری اور ایک فوجی سمجھ سکتا ہے جس کے پاس ایسے فون آتے ہیں۔ راہل نے کہا کہ کل جب ان سے پوچھا گیا کہ اس یاترا سے کیا حاصل ہوا تو وہ اسی وقت بتانا چاہتے تھے لیکن وہ آج بتا رہے ہیں کہ یاترا کا مقصد ہے کہ ’’ایسے فون کال بند ہونے چاہئے۔‘‘راہل گاندھی نے اپنے خطاب میں کہا کہ ’’آپ برف کے بیچ میں کھڑے ہیں اور آپ کو سردی نہیں لگ رہی، بارش میں آپ بھیگے اور گرمی میں آپ کو گرمی نہیں لگی کیونکہ ملک کی طاقت آپ کے ساتھ ہے‘‘۔ ’’کشمیر کو گھر اور کشمیریت ‘‘کو ایک نئی سوچ قرار دیتے ہوئے کانگریس لیڈر راہل گاندھی نے کہا کہ دشمنوں کو رنگ بدلنے کا موقع دینے کے لیے سفید ٹی شرٹ پہنی۔ انہو ں نے مزید کہا کہ مجھے کہا گیا تھا کہ کشمیر میں آپ پر حملہ ہو سکتا ہے تاہم مجھے گرینیڈ کے بجائے پیار و محبت کشمیر میں ملا ۔ انہوں نے مزید کہا کہ کشمیر کے درد کو سمجھ سکتے ہیں کیونکہ ہم خود اس کا شکار ہو چکے ہیں ۔

اسی دوران پرینکا گاندھی نے کہا کہ بھارت جوڑو یاترا نے امن کا پیغام دیکر جموں کشمیر میں نفرت کا خاتمہ کیا ہے ۔تفصیلات کے مطابق بھاری برفباری کے بیچ سرینگر کے شیر کشمیر اسٹیڈیم میں بھارت جوڑو یاترا ا ختتام پذیر ہوئی ۔ اس موقعہ پر اختتامی تقریب میں پی ڈی پی صدر محبوبہ مفتی ، نیشنل کانفرنس کے نائب صدر عمرعبد اللہ کے علاوہ دیگر کئی سیاسی پارٹیوںکے لیڈران بھی آخری تقریب میں نظر آئیں ۔ بھاری برفباری کے بیچ اسٹیڈیم میں عوامی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کانگریس لیڈر راہل گاندھی نے کہا ’’ میں نے جان بوجھ کر سفید ٹی شرٹ پہنی تھی تاکہ دشمنوں کو اس کا رنگ بدلنے کا موقع ملے‘‘ لیکن ہوا کیا مجھے کشمیر میں ہاتھ میں گرینیڈ کے بدلے پیار و محبت ملا ۔ انہوں نے کہا کہ بھارت جوڑو یاترا کا پیغام وادی میں اموات کا پیغام دینے والی فون کالز کے خاتمے کیلئے تھا۔ریلی سے خطاب کرتے ہوئے راہل نے کہا کہ ان کی ٹی شرٹ کے بارے میں بہت زیادہ بات کی گئی۔ ’’میں نے (سفید) ٹی شرٹ پہنی تھی تاکہ اپنے دشمنوں کو اس کا رنگ بدلنے کا موقع دیا جا سکے، لیکن اس کے بجائے مجھے گرینیڈ کے بجائے ڈھیروں پیار اور پرجوش خواہشات ملی‘‘۔انہوں نے کہا کہ ’’میرے لیے کشمیریت گھر ہے،میں وہ سمجھتا ہوں کہ کشمیر میرا اگلا گھر ہے کیونکہ میرا کا خاندان کئی دہائیوں قبل کشمیر سے الہ آباد منتقل ہوا تھا‘‘۔انہوں نے یہ بھی کہا کہ دستی بم کے بجائے کشمیریوں نے انہیں پیار اور پیار دیا۔ کشمیر میں پچھلے چار دنوں میں پیدل مارچ کرنے کے لیے نہیں بلکہ یاترا کے لیے گاڑیوں کا استعمال کرنے کے لیے کہا گیا تھا، لیکن میں نے فیصلہ کیا کہ جو لوگ مجھ سے نفرت کرتے ہیں، ان کو ایک موقع دینے کے لیے میری قمیص کا رنگ خون سے بدل کر پیدل چلنا چاہیے۔ راہل نے کہا کہ وہ کشمیریوں کے درد اور اذیت کو بخوبی سمجھ سکتے ہیں۔ ’’میری یاترا کے دوران ہر کشمیری سے ملاقات ہوئی اس کی آنکھوں میں آنسو تھے۔ بی جے وائی کا بنیادی پیغام موت کے پیغامات دینے والی فون کالز کا اختتام دیکھنا ہے۔ فوجیوں، سی آر پی ایف کے جوانوں اور کشمیریوں سمیت خاندانوں کا کیا حشر ہوگا جب انہیں اپنے پیاروں کی موت/قتل کے پیغامات کے ساتھ فون کالز موصول ہوں گی؟ یہ بات میرے سوا اور کون سمجھ سکتا ہے؟ مجھے اپنے والد کی موت اور یہاں تک کہ میری دادی کی موت کے بارے میں فون کالز موصول ہوئی ہیں۔‘‘راہل نے وزیر داخلہ امت شاہ اور دیگر بی جے پی لیڈروں کو وادی میں پد یاترا کرنے یا منعقد کرنے کی ہمت کی جیسا کہ انہوں نے کیا تھا۔ ’’مجھے یقین ہے کہ وہ ایسا نہیں کر سکتے کیونکہ وہ خوفزدہ ہیں اور ان کے دلوں میں خوف ہے‘‘۔ راہل نے کہا کہ کشمیریت ایک سوچ تھی اور کشمیر ان کا گھر ہے۔ درحقیقت کشمیریت جو فکر پیش کرتی ہے وہ میرے لیے ایک گھر ہے۔ میرے لیے گھر صرف چار دیواری نہیں ہے بلکہ وہ سوچ ہے جو کشمیریت دیتی ہے اور تحفہ دیتی ہے۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے راہل کی بہن پرینکا گاندھی نے کہا کہ بھارت جوڑو یاترا کا بنیادی پیغام محبت پھیلانا اور دلوں کو اکٹھا کرکے نفرت کے خاتمے کا مطالبہ کرنا ہے۔ ’’آخر کار، ہم کامیاب ہو گئے‘‘۔

Related posts

خواتین ٹی20-ورلڈ کپ: آسٹریلیاکی خطابی ہیٹرک، افریقہ کو 19رنز سے دی شکست

www.samajnews.in

ملائم سنگھ کا سیاسی سفر

www.samajnews.in

پکچر ابھی باقی ہے: شاہ رخ خان

www.samajnews.in