45.1 C
Delhi
مئی 29, 2024
Samaj News

چلتے چلتے

دھواں دھواں سا ہے خیال میرا
غبار ہے دِل کا کبھی راکھ ہے
کبھی گماں ہوتا ہیکہ شمع راکھ ہوئی
گردن جھکائی تو دیکھا دِل جلا دیا
یہ کیسی بھی قِسمت ہے اندھیرے کی
چاند ہم آغوش ہوا، تو سورج رقیب ہوا
کوئی کیا جانے رفیق کیا ہوا
آب حیات ہوا،جوشراب ہوا…

محمد رفیق عثمان منصوری

Related posts

زمبابوے میں چین کے کان کنی کے منصوبوں پر عوامی تشویش میں اضافہ

www.samajnews.in

لڑکیوں کی تعلیم پر’’ یو ٹرن‘‘کے بعد امریکہ نے طالبان کے ساتھ دوحہمیٹنگ منسوخ کر دی

www.samajnews.in

IREDAنے تین ہزارالیکٹرک گاڑیاں خریدنے ک کیلئے بلیو اسمارٹ موبلٹی کو268 کروڑروپے کی مالی امداد کی

www.samajnews.in