45.1 C
Delhi
مئی 29, 2024
Samaj News

کجریوال کا ایجوکیشن ماڈل سنگھی اور مسلم دلت مخالف:کلیم الحفیظ

نئی دہلی،سماج نیوز:آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین دہلی ریاست کے صدر کلیم الحفیظ نے پریس کانفرنس کے دوران میڈیا سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عام آدمی پارٹی اور دہلی کے وزیر اعلی اروند کجریوال جس ایجوکیشن ماڈل کو دنیا کا سب سے بہترین ماڈل بتاتے ہیں وہ دراصل سنگھی اور فرقہ پرست غریب دلت اور مسلم مخالف ماڈل ہے جس میں سماج کے پسماندہ لوگوں اور خاص طور پر دلت اور مسلمانوں کے لئے کوئی جگہ نہیں ہے۔کلیم الحفیظ نے کہا کہ سوال صرف یہ نہیں ہے کہ اروند کجریوال نے دہلی میں 500اسکول بنانے کا وعدہ کیا تھا جس کو پورا نہیں کیا بلکہ دہلی وقف بورڈ کے 250 اسکولوں کے پروجیکٹ کو بھی بند کر دیا۔ اگر یہ اسکول بنتے تو سب سے زیادہ فائدہ دلت مسلم اور سماج کے پسماندہ غریب لوگوں کا ہوتا۔

دہلی مجلس صدر کلیم الحفیظ نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے دلت مسلم ایجوکیشن کیلئے لائے گئے 250 وقف اسکولوں پر مبنی پروجیکٹ کو بند کرنے پرسوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ کرایہ کی عمارت میں اسکول چلانے کے فیصلہ سے پیچھے ہٹنا سنگھی سوچ

آج بھی دلت مسلم علاقوں میں اسکول نہیں ہیں۔کلیم الحفیظ نے کہا کہ عام آدمی پارٹی کی سنگھی غریب مسلم دلت مخالف سوچ کا اس سے بھی بڑا ثبوت 250 وقف اسکولوں کے پروجیکٹ سے پیچھے ہٹنے کا فیصلہ ہے یہ ظلم دہلی کے وزیر تعلیم منیش سسودیا اور وزیر اعلی اروند کجریوال نے کیا ہے کیا یہ غریب عام آدمی مخالف نہیں ہے۔ اس کے پیچھے آخر کیا وجہ ہے عام آدمی پارٹی اور اروند کجریوال دہلی میں ڈی ڈی اے کے ذریعہ اسکولوں کیلئے زمین نہ دیے جانے کی شکایت کرتے ہیں لیکن وقف اسکولوں کیلئے زمین کی ضرورت ہی نہیں تھی کیونکہ تمام اسکولوں کو کرایہ کی عمارت میں چلایا جانا تھا اور وقف بورڈ کے ذریعہ تقرریاں بھی ہونے لگی تھیں پائلٹ پروجیکٹ کے تحت 16 اسکولوں پر کام بھی شروع ہوگیا تھا لیکن اروندکجریوال اینڈ کمپنی نے جس پروجیکٹ کا الیکشن سے پہلے وعدہ کیا تھا پھر ان اسکولوں کانام تک نہیں لیا۔ کلیم الحفیظ نے کہا کہ ووٹ لینے کے بعد دھوکا دینا عام آدمی پارٹی اور اروند کجریوال اینڈ کمپنی کی فطرت ہے اور سچائی یہ ہے کہ عام آدمی پارٹی نہیں چاہتی کہ غریب دلت مسلمان تعلیم یافتہ ہوں اور ترقی کریں۔پریس کانفرنس کے دوران حصہ داری مورچہ میں شامل ہوئی وارڈ 218 سندر نگری سے امیدوارمحترمہ چترا شالنی کو مجلس کی جانب سے اپنانے کا اعلان کیا گیا۔ ریاستی صدر کلیم الحفیظ نے کہا کہ چتراشالنی ہماری امید وار ہے ہم نہ صرف ان کی حمایت کریں گے بلکہ تشہیر کے ذریعہ ان کوکامیاب بنانے کا بھی کام کریں گے۔ مجلس نے ہمیشہ پسماندہ دلت غریب مسلمان کی آواز اٹھانے کا کام کیا مجلس آج بھی اس عزم پر قایم ہے۔

Related posts

دہلی کی ہوا ہوئی زہریلی، سانس لینا مشکل

www.samajnews.in

ورلڈ کپ 2023: ٹیم انڈیا نے بنگلہ دیش کو ہرایا، کوہلی کی شاندار سنچری

www.samajnews.in

ضلعی جمعیت اہل حدیث سدھارتھ نگر، یوپی کی رفاہی وسماجی خدمات قابل ستائش

www.samajnews.in